25

شریف برادران کی آج سعودی ولی عہد سمیت دیگر سے ملاقاتیں متوقع

مسلم لیگ (ن)کی اعلی قیادت سعودی عرب پہنچ گئی؛

وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف 27 دسمبر کو خصوصی دورے پر سعودی عرب روانہ ہوئے تھے جن کے لیے سعودی عرب سے خصوصی طیارہ بھیجا گیا تھا۔شریف برادران کے سعودی عرب کے دورے پر مسلم لیگ (ن) کے رہنماؤں کی جانب سے متضاد بیانات سامنے آرہے ہیں-وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کا کہنا تھا کہ مقدس مقام ہونے کی وجہ سے کوئی نہ کوئی وزیر یا حکومتی شخصیت سعودی عرب جاتی ہے-اس لیے ضروری نہیں کہ ہر کوئی سعودی عرب جاکر سیاست کرے۔اپوزیشن کی بات بالکل غلط ہے کہ سعودی عرب میں کوئی این آر او ہو رہا ہے-اگر سعودی عرب این آر او کروا رہا ہے تو بتائیں کہ دوسرا فریق کہاں ہے؟

سینیٹرمشاہد اللہ؛

دوسری طرف سینیٹر مشاہد اللہ کا کہنا تھا کہ پاکستانی سیاست میں سعودی عمل دخل کی کوئی نئی بات نہیں، ماضی میں پی این اے کی تحریک کے دوران بھی سعودی عرب حکومت اور اپوزیشن کے درمیان کردار ادا کرچکا ہے۔(ن) لیگ کے رہنما سینیٹر پرویز رشید کا کہنا ہے کہ صدر مسلم لیگ (ن) نواز شریف کے دورہ سعودی عرب کو ذاتی قرار دینے والے لوگ ناواقف ہیں۔ یہ دورہ ذاتی ہے- وہ دو ریاستوں کے تعلقات کی نوعیت سے ناواقف ہیں ، ایسی بات بین الاقوامی رشتوں کی اہمیت سے بے خبر کھلاڑی ہی کرسکتے ہیں۔پرویز رشید نے کہا کہ عمران اور ان کے حواری نواز شریف کے دورہ سعودی عرب پر خاموشی اختیار کریں۔دوسری جانب شریف برادران کی سعودی عرب روانگی پر اپوزیشن نے شدید تنقید کی ہے۔

عمران خان کے مطابق این آر او لیا جا رہا ہے؛

جب کہ عمران خان کا کہنا ہے کہ ایک اور این آر او لینے کی کوشش کی جارہی ہے، شہباز شریف سعودی عرب کس حيثیت میں گئے؟ وہ حدیبیہ کیس میں بچ نہیں سکتے، ٹرمپ کے گھٹنے پکڑ لیں پھر بھی شریف خاندان نہیں بچ سکےگا۔ذرائع کے مطابق نواز شریف 2 جنوری کو وطن واپس آئیں گے اور آئندہ ہفتے اسلام آباد کی احتساب عدالت میں بھی پیش ہوں گے۔نوازشریف کی اچانک سعوی عرب روانگی کے باعث 31 دسمبر کو کوٹ مومن، سرگودھا میں منعقدہ جلسہ منسوخ کردیا گیا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ اب نواز شریف 7جنوری کو کوٹ مومن میں عوامی اجتماع سے خطاب کریں گے۔

Latest news,News today,World news,Pakistan,Urdu news,Saudi Arabia,Nawaz Sharif,PMLN

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں